Pakistan News

جعلی ڈگری والوں کیخلاف 2 روز میں کارروائی کا حکم

اسلام آباد: پاکستان کی عدالت عظمی نے الیکشن کمیشن کوجعلی ڈگری والے ارکان کے خلاف 2 روز میں کارروائی کا حکم دے دیا۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے منتخب ارکان کی جعلی ڈگریوں کے حوالے سے کیس کی سماعت کی، اس موقع پر دوران سماعت عدالت نے سیکرٹری الیکشن کمیشن سے استفسار کیا کہ امیدواروں کی اسناد کی چیکنگ کے لیے کیا اقدامات کیے گئے ہیں؟۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن اشتیاق احمد نے بتایا کہ جعلی ڈگریوں کے 69 کیس تھے جن میں سے 34 کے خلاف کارروائی کے لیے متعلقہ انتظامیہ کو ہدایت کردی گئی جب کہ  249 ارکان پارلیمنٹ نے میٹرک اور ایف اے کی اسناد ابھی تک فراہم نہیں کیں۔

چیف جسٹس نے ہدایت دی کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ پارلیمنٹ میں اہل اور ایماندار لوگ ہی سامنے آئیں۔

انہوں نے الیکشن کمیشن کو کاغذات نامزدگی پر اعتراضات کا طریقہ کاربھی آسان بنانے کا حکم دیتے ہوئے قراردیا کہ کاغذات پر اعتراضات اور اپنے نمائندوں سے متعلق معلومات تک رسائی ووٹرز کا آئینی حق ہے، انہیں اس حق سے محروم نہیں کیا جاسکتا، لوگوں کوشعور آگیا ہے کہ کسے ووٹ دینا ہے۔

اس موقع پر عدالت نے تمام ہائی کورٹس کے رجسٹراروں کو ماتحت عدلیہ میں جعلی ڈگری سے متعلق کیسوں کی تفصیلات فراہم کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت 28 مارچ تک ملتوی کردی۔

Most Popular

To Top